Breaking News
Home / ہیلتھ / مردانہ کمزوری کاکامیاب علاج۔۔۔بغیر کسی دوائی کے۔۔ بس یہ طریقہ استعمال کریں

مردانہ کمزوری کاکامیاب علاج۔۔۔بغیر کسی دوائی کے۔۔ بس یہ طریقہ استعمال کریں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) مردانہ طاقت کو بڑھانے کے آٹھ بہترین طریقے نہ کوئی نسخہ نہ کوئی ٹیبلیٹ صرف یہ کام کرو دوستوں آج میں آپ کو مردانہ طاقت کر بڑھانے کا نسخہ بتانے جا رہا ہوں ۔۔میں آپ کو آٹھ ایسے آٹھ طریقے بتائوں گا ۔۔سب سے پہلی بات یہ کے اپنے داغ میں مردانہ کمزوری کو نہ رکھنے ۔

اگر آپ مردانہ کمزوری کا شکار بھی ہے تو یہ نہ سوچا کرنے کے آپ سے بیماری میں متبلا ہیں ۔۔۔اور یہ بھی نہ سوچا کرنے کے میں مردانہ کمزوری کی وجہ سے شادی کے لالق نہیں ہوں ۔۔آپ یہ سوچنے کے آپ ایک تندوست اور طاقت وار انسان ہیں ۔۔۔یہ خیال اپنے داغ میں رکھنا ہے ۔۔۔دوسرا ۔۔۔۔یہ کے ہر وقت کے تصور سے دُور رہنا ہے ہوتا ہے نہ کے اکثر کسی خوبصورت لڑکی کو دیکھتا ہے یہ پھر کوئی اسی ظرح کی فلم دیکھتا ہے ۔۔۔ یا پھر کوئی بھی تصور ہی گزار جاتی ہے ۔۔۔پھر انسان سوچتا ہے کہ میں اس کے ساتھ یہ صحبت کروں تو اس خیال سے اپنے آپ کو دُور رکھنے ۔۔۔یہ تھی دوسری بات اب تیسری بات ہے ۔۔۔۔۔۔۔جاری ہے ۔ اپنے انداز خود اعتماد پیدا کرنے اور پریشانی کو اپنے پاس نہ آنے دیے ۔۔۔انسان جب تک خوداعتمادی رکھتا ہے وہ صحت مند رہتا ہے ۔۔۔جو وہ خوداعتمادی نہیں کرتا تو دنیا کے ساری بیماریں اُس پر اثر کرتی ہیں ۔۔۔اس کے

ساتھ ساتھ ساری پریشانی بھی اس پر اثر انداز ہوتی ہیں ۔۔۔اس کی وجہ سے انسان بیماری پڑے جاتا ہے اور اس کی وجہ سے اُس کی مرادنہ طاقت جاتی رہتی ہے ۔۔۔کوئی کے اُس کا داغ ہی خوداعتمادی کے قبل نہیں رہتا ۔۔۔چوتھی بات ۔۔گرام اشیائے ۔۔گرم معاصلے جو کے ہم کھانوں میں کھاتے ہیں اور ہم تیز معاملہ کھانے ہیں ۔۔۔آپ تیز مرچوں والے کھانوں کو تر کرد ے ۔۔آپ کھلی ہوا اور سورچ کی دھوپ سے فائدہ اٹھانے سورچ کی دُھوپ انسان کی جسم کے انداز جینے سپرم ہیں اُن کو طاقت وار بتاتی ہے ۔۔۔۶ بات ۔۔جو انسان آپنے اُوپر وہم کو تری کرتا ہے اُس کی وجہ سے بھی انسان کی مردانہ طاقت میں کمزوری آتی ہے ۔

Share

About admin

Check Also

ہر بیماری کی جڑ قبض ہے۔۔۔پیٹ کو صاف رکھنے کا سارا علاج آپ کے کچن میں ہی ہے

کہتے ہیں انسان کا سب سے بڑا دشمن اس کا پیٹ ہے۔۔۔اگر وہ اپنے پیٹ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com