Breaking News
Home / پاکستان / خان صاحب !!! مار کٹائی میں اگر کوئی ہلاکت ہو گئی تو ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے پر کون حملہ کر کےوارننگ دینا چاہتا تھا ؟ چوہدری شجاعت کا تہلکہ خیز انکشاف ، بڑے رازوں سے پردہ اٹھا دیا گیا

خان صاحب !!! مار کٹائی میں اگر کوئی ہلاکت ہو گئی تو ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے پر کون حملہ کر کےوارننگ دینا چاہتا تھا ؟ چوہدری شجاعت کا تہلکہ خیز انکشاف ، بڑے رازوں سے پردہ اٹھا دیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے انکشاف کیا کہ حکومت کے خلاف مولانا فضل الرحمان کے دھرنے پرکچھ لوگ دھاوا بولنے کے حامی تھے مگر پرویز الہی نے اہم کردار ادا کرکے معاملہ سلجھا دیا۔چوہدری شجاعت حسین نے بیان میں کہا کہ کوئی وزیراعظم عمران خان سے بات کرنے کو تیار نہ

تھا. چوہدری پرویز الہی حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے ممبر نہ ہونے کے باوجود عمران خان سے ملے اور انہیں مشورہ دیا کہ اگر مارکٹائی میں کوئی ہلاکت ہوگئی تو وزیراعظم کو ہرچیز کا جواب دینا پڑے گا جس پر فیصلہ موخر کردیا گیا۔چوہدری شجاعت نے مزید کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کا معاملہ ق لیگ کی قیادت نے افہام و تفہیم سے حل کرایا مگر الزام انکی پارٹی پر لگا دیا گیا، پولیس اور مدارس کے طلبہ آمنے سامنے کھڑے تھے مگر ہم نے ایک گلاس بھی نہیں ٹوٹنے دیا۔چودھری شجاعت حسین کا مزید کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف بھی بغاوت کیس میں ملیحہ لودھی کو گرفتار کرنا چاہتے تھے، مگر ہم نے انہیں الرٹ کیا کہ گرفتاری کے خلاف پاکستانی میڈیا اور انٹرنیشنل کمیونٹی کا سخت ردعمل آئے گا۔ موجودہ بحران کا حل بھی اسی میں ہے کہ سب چیزیں فراموش کرکے آگے بڑھا جائے،وزیراعظم عمران خان سے کہا ہے کہ بحران سے نکلنے کےلئے سب اختلاف بھلا کر معاملات باہمی مشاورت سے طے کریں۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق جمیعت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان ایک بار پھر حکومت مخالف تحریک کیلئے متحرک ہوگئے، پاکستان مسلم لیگ ق کے سربراہ چودھری شجاعت حسین نے سربراہ جے یوآئی ف مولانا فضل الرحمان کو ملاقات کی دعوت دے دی، دونوں سیاسی رہنماؤں میں جلد گجرات میں ملاقات ہوگی، حکومت مخالف اتحاد مضبوط کرنے پر بات چیت کی جائے گی۔جمیعت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے آل پارٹیز کانفرنس بلانے اور حکومت مخالف تحریک کیلئے سیاسی جماعتوں سے رابطے شروع کردیے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان پیپلزپارٹی ، مسلم لیگ ق، مسلم لیگ ن اور ایم کیوایم سمیت دیگر جماعتوں کے قائدین سے ٹیلیفونک رابطے کیے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کے رابطہ کرنے پر چودھری شجاعت نے انہیں گجرات میں ملاقات کی دعوت دے دی ہے۔دونوں رہنماؤں کے درمیان جلد ملاقات متوقع ہے۔ اسی طرح مولانا فضل الرحمان نے آج پیپلزپارٹی کے اعلیٰ قیادت آصف زرداری اور چیئرمین پی پی بلاول بھٹو زرداری سے بھی ملاقات کی ہے۔ ملاقات میں سیاسی امورپر بات چیت کی گئی۔ تینوں رہنماؤں نے این ایف سی ایوارڈ، 18ویں آئینی ترمیم پرغیرلچکدار مؤقف اپنانے پر اتفاق کیا۔ آصف زرداری نے کہا کہ کورونا معاملے پرعمران خان کی نااہلی سامنے آگئی ہے۔آصف زرداری نے کہا کہ پہلے ہی کہا تھا عمران خان حکومت چلانے کے اہل نہیں۔ بجٹ اور این ایف سی ایوارڈ پرسمجھوتہ نہیں ہوگا۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان نے عوامی مفاد میں کوئی کام نہیں کیا۔ اپوزیشن جماعتیں سلیکٹڈ حکومت کے خلاف ایک پیچ پر ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ سیاسی قائدین سے رابطوں میں حکومت مخالف اتحاد کو مضبوط کرنے اور آل پارٹیز کانفرنس بلانے پر مشاورت کی۔

Share

About admin

Check Also

نااہلی کیس کی سماعت۔۔۔اہم ترین فیصلہ جاری 440وولٹ کا بڑا جھٹکا۔۔پوری تحریک انصاف ہکا بکا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے الیکشن کمیشن میں نااہلی کیس پر سماعت رکوانے کی فیصل واوڈا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com