Home / پاکستان / دل چاہ رہاہے تمہارا ماتھاچوم لوں ،گلے لگا لوں ،وزیراعظم یہ بات کس کے لیے کہہ دی؟جان کر آپ بھی تعریف کیا بنا نہ رہ سکیں گے

دل چاہ رہاہے تمہارا ماتھاچوم لوں ،گلے لگا لوں ،وزیراعظم یہ بات کس کے لیے کہہ دی؟جان کر آپ بھی تعریف کیا بنا نہ رہ سکیں گے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)واضح رہے کہ چند روز قبل نوکری کا جھانسہ دیکر کراچی سے کشمور لائی گئی خاتون اور اس کی 4 سالہ بیٹی کو اجتماعی طور پر بُرے فعل کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ خاتون خیر اللہ بگٹی نامی ملزم کے چنگل سے جان چھڑا کر پولیس اسٹیشن پہنچی جہاں اے ایس آئی محمد بخش نے اپنی بیٹی کی مدد سے ملزم رفیق ملک کو پکڑ لیا ۔

اور پھر ملزم کی نشاندہی پر 4 سالہ بچی علیشا کو ایک گھر سے بازیاب کرایا گیا۔گزشتہ روز پولیس ملزم رفیق کو اس کے ساتھیوں کے ٹھکانوں کی نشاندہی کے لیے ساتھ لیکر گئی تو ساتھی کی وجہ سے ملزم رفیق مر گیا جب کہ پولیس نے اس فعل میں ملوث دوسرے ملزم خیراللہ بگٹی کو پکڑ لیا۔علاوہ ازیں سندھ حکومت نے کشمور واقعے کے ملزم کو پکڑنے والے پولیس اہلکار کے لیے اعلیٰ پولیس ایوارڈ کی سفارش کرنے اور ان کی بیٹی کے لیے 10 لاکھ روپے انعام کا اعلان کیا ہے۔کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سندھ حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نےکہا کہ کشمور میں تعینات پولیس اہلکار محمد بخش ابڑو اور ان کی بیٹی نے جس بہادری سے ملزمان کو پکڑا اس پر ہم سب کو فخر ہے۔انہوں نے کہا کہ پولیس اہلکار کو پولیس کا اعلیٰ ترین ایوارڈ  قائداعظم پولیس میڈل دلوانے کے لیے وفاقی حکومت سے سفارش کریں گے جبکہ وزیراعظم عمران خان نے کشمور واقعے میں بہادری دکھانے والے پولیس اہلکار سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اور اے ایس آئی محمد بخش کو شاباش دی۔وزیراعظم عمران خان نے اہلکار سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ دل چاہ رہا ہے تمہارا ماتھاچوم لوں اورگلے لگا لوں ،قوم کو آپ کی بہادری پر فخر ہے ، وزیراعظم نے اہلکار اور ان کے بیٹی کے مثالی اقدام اور جرأت کی تعریف کی، وزیراعظم نے کہا کہ اہلکار محمد بخش نے پولیس کے مثبت کردار کو اجاگر کیا۔ وزیراعظم نے ایس ایس پی کشمور سے بھی فون پر بات چیت کی۔

Share

About admin

Check Also

21سالہ لڑکی اور 10سالہ بچہ۔۔۔ پاکستان کے اہم شہر سے ایسی خبر کہ شیطان بھی شرما جائے۔معاشرہ کس طرف چل پڑاہے،جانیے تفصیل

پھنڈی بھٹیاں(نیوز ڈیسک)۔۔ ظلم کی انتہا۔کہیں یا تعلیم کی کمی۔۔۔ ہمارےمعاشرے میں ان گنت مسائل …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com