Breaking News
Home / اہم خبریں / اس پروگرام میں 46 لاکھ کی بجائے 70 لاکھ کر دی جائے ۔۔۔ عمران خان نے غریبوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

اس پروگرام میں 46 لاکھ کی بجائے 70 لاکھ کر دی جائے ۔۔۔ عمران خان نے غریبوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کفالت پروگرام سے مستفید افراد کی تعداد میں اضافے کی منظوری دے دی۔اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم کی زیر صدارت احساس کفالت پروگرام سے متعلق اجلاس ہوا جس میں مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور معاون خصوصی تخفیف غربت ثانیہ نشتر نے شرکت کی۔

وزیراعظم عمران خان نے احساس کفالت پروگرام سے سہولت حاصل کرنے والوں کی تعداد 46 لاکھ سے بڑھا کر 70 لاکھ کرنے کی منظوری دی۔ثانیہ نشتر نے وزیراعظم کو بریفنگ دی کہ کورونا وبا سے معاشرے کے کمزور طبقات کی مشکلات بڑھ رہی ہیں، دنیا بھر کے ممالک نے وبا کی پیش نظر عوامی فلاح کے لیے معاشی پیکیج دئیے ہیں۔وزیراعظم کو بریفنگ دی گئی کہ پاکستان کا شمار ان کامیاب ممالک میں ہوتا ہے جس نے وبا کا کامیابی سے مقابلہ کیا، حکومت نے فلاح عامہ کے لیے کورونا وبا کے پیش نظر اضافی امداد مختص کی، بین الاقوامی اداروں اور اقوام عالم پاکستان کے اقدامات کو سراہا رہے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ اس وقت حکومت کی تمام تر توجہ معاشی بہتری پر مرکوز ہے، شہریوں کی حفاظت، معاشی سرگرمیوں میں استحکام، اضافہ دونوں مقصود ہیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا سے پیدا ہوئے حالات کا سب سے زیادہ بوجھ غریب عوام پر پڑ رہا ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ احساس کے دائرہ کار میں ممکنہ حد تک توسیع کی جائے، وزیراعظم نے احساس کفالت پروگرام کو جلد از جلد حتمی شکل دینے کی ہدایت کی۔۔ دوسری طرف ایک خبر کے مطابق لاہور کی احتساب عدالت نے مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ شہباز کو بکتر بند گاڑی میں عدالت لانے کے خلاف درخواست پر سیکرٹری داخلہ پنجاب اور ایس پی سیکیورٹی کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست میں شہباز شریف کی جانب سے مو¿قف اختیار کیا گیا کہ کمر درد میں مبتلا ہوں لیکن سیاسی انتقام کا نشانہ بناتے ہوئے بکتر بند گاڑی میں لایا جا رہا ہے، گاڑی کی حالت بھی درست نہیں، اس وجہ سے کمر درد میں اضافہ ہو رہا ہے، استدعا ہے کہ عدالت بکتر بند گاڑی میں لانے سے روکنے کا حکم دے۔سیکریٹری داخلہ پنجاب نے بھی جواب جمع کرایا جسے عدالت نے مسترد کر دیا اور حکم دیا کہ سیکرٹری داخلہ اور ایس پی سیکیورٹی 19 نومبر کو ذاتی حیثیت میں پیش ہو کر وضاحت دیں۔عدالت نے ریمارکس دیے کہ کوئی ذمہ داری لینے کو تیار ہی نہیں ہے، سب ایک دوسرے پر ذمہ داری ڈال رہے ہیں۔عدالت نے شہباز شریف کی جیل میں طبی سہولتیں نا ملنے کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست پر بھی وکلاءکو بحث کے لیے 23 نومبر کو طلب کر لیا۔

Share

About admin

Check Also

’’شہزادی کی طرف پشت کرکے کھڑے نہیں ہونا کیونکہ۔۔‘‘ سعودی شہزادی کی پرسنل اسسٹنٹ رہنے والی ’’ خاتون ‘‘ نے ایسے انکشافات کردیے کہ ہر سننے والا دنگ رہ جائے گا

’’شہزادی کی طرف پشت کرکے کھڑے نہیں ہونا کیونکہ۔۔‘‘ سعودی شہزادی کی پرسنل اسسٹنٹ رہنے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com