Home / اہم خبریں / بریکنگ نیوز: انتظار کی گھڑیاں ختم۔۔۔!! ملک بھر کے تعلیمی اداروں میں چُھٹیوں کا اعلان کر دیا گیا

بریکنگ نیوز: انتظار کی گھڑیاں ختم۔۔۔!! ملک بھر کے تعلیمی اداروں میں چُھٹیوں کا اعلان کر دیا گیا

لاہور (ویب ڈیسک) وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت اجلاس ہوا۔ تعلیمی اداروں سے متعلق آج اجلاس ہوا ،ان کا کہنا تھا کہ صوبوں نے تعلیمی اداروں سے متعلق تجاویز پیش کی تھیں۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا 26نومبر سے ملک کے تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت آج اجلاس ہوا۔ ملک بھرمیں تعلیمی ادارے آن لائن کلاسز کا انعقاد کریں گی ، وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا 26نومبر 24دسمبرتک ملک کے تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ اس کے بعد 11 جنوری تک موسم سرما کی چھٹیاں کی جائیں گی۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا11جنوری کو ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھلیں گے ۔ کورونا کے باعث تمام امتحانات ملتوی کردیئے گئے۔ ملک میں کورونا کی دوسری لہر کے دوران کیسز میں خطرناک حد تک اضافہ ہواہے اور تعلیمی اداروں میں کورونا مثبت آنے کی شرح 82 فیصد تک جاپہنچی ہے۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی سربراہی میں وزرائے تعلیم کا اجلاس ہوا جس میں ملک اور بالخصوص تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شفقت محمود نےکہا کہ 26 نومبر سے اسکول، کالجز، یونیورسٹیز اور ٹیوشن سینٹرز کوبند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ووکیشنل اداروں کو بند نہیں کررہے، تربیت کا عمل جاری رہے گا۔ طلبہ ایک ماہ گھروں سے آن لائن تعلیمی سرگرمیاں جاری ریکھیں گے۔ مارچ یا اپریل میں بورڈ کے امتحانات کو مئی میں کرانے کی سفارش کی ہے۔ذرائع کا کہنا ہےکہ وزرائے تعلیم کے اجلاس میں کورونا کے باعث اسکولوں کی بندش پر وزرائے تعلیم متفق ہوگئے تاہم اسکولوں کی بندش کے دورانیے پر گفتگو جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک ماہ اسکولوں کی بندش کی تجویز وفاقی حکومت نے دی۔ وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ اساتذہ اور بچوں کی صحت سب سے پہلے ہے، بچوں کی صحت پر کوئی سمجھوتا نہیں کرسکتے۔

Share

About admin

Check Also

سعودی عرب جانے کے خواہشمند یہ خبر ضرور پڑھ لیں

سعودی عرب جانے کے خواہشمند یہ خبر ضرور پڑھ لیں، پھر نہ کہنا خبر نہیں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com