Breaking News
Home / پاکستان / 14دسمبر کو پوری دنیا تاریکی میں ڈوب جائے گی

14دسمبر کو پوری دنیا تاریکی میں ڈوب جائے گی

14دسمبر کو پوری دنیا تاریکی میں ڈوب جائے گی 14دسمبر کو پوری دنیا تاریکی میں ڈوب جائے گی زمین پر سورج گرہن اس وقت لگتا ہے جب چاند دورانِ گردش زمین اور سورج کے درمیان آ جاتا ہے، جس کی وجہ سے سورج کا مکمل یا کچھ حصہ دکھائی دینا بند ہو جاتا ہے۔ اس صورت میں چاند کا سایہ زمین پر پڑتا ہے۔ چونکہ زمین سے سورج کا فاصلہ زمین کے چاند سے فاصلے سے 400 گنا زیادہ ہے اور سورج کا محیط بھی چاند کے محیط سے 400 گنا زیادہ ہے، اس لیے گرہن کے موقع پر چاند سورج کو مکمل یا کافی حد تک زمین والوں کی نظروں سے چھپا لیتا ہے۔ سورج گرہن ہر وقت ہر علاقے میں نہیں دیکھا جا سکتا،

اس لیے سائنسدانوں سمیت بعض لوگ سورج گرہن کا مشاہدہ کرنے کے لیے دور دراز سے سفر طے کرکے گرہن زدہ خطے میں جاتے ہیں۔ مکمل سورج گرہن ایک علاقے میں تقریباً 370 سال بعد دوبارہ آ سکتا ہے اور زیادہ سے زیادہ سات منٹ چالیس سیکنڈ تک برقرار رہتا ہے۔ البتہ جزوی سورج گرہن کو سال میں کئی دفعہ دیکھا جا سکتا ہے۔ پاکستان میں رواں سال 2چاند 2سورج گرہن ہوئےٹونٹی20کا پہلا چاند گرین10 اورگیارہ جنوری کی درمیانی شب کو ہوا تھا جو پاکستان میں بھی نظرآیا ،،،رواں سال کا دوسرا چاند گرہن 5اور 6جون کی درمیانی شب کو جبکہ پہلا سورج گرہن 21جون کو ہوا جو پاکستان میں دیکھا گیا تھا اور اب رواں سال کا چھوتھا اور آخری سورج گرہن 14دسمبر کو دیکھا جائے گا ،سال 2020 کا پہلا چاند گرہن پاکستان کے مقامی وقت کےمطابق صبح دس بج کر 8 منٹ پر شروع ہواجبکہ مکمل گرہن 12 بج کر 10 منٹ پر لگا تھا سال کے پہلے چاند گرہن کے نظارے کو دنیا بھر میں دیکھا گیا تھا ۔۔۔اور اب سال کا آخری گرہن لگنے جا رہا ہے اس حوالے سے وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا پہلے سورج گرہن کے متعلق کہنا تھا اس سال 2 بار سورج کو اور 4 بار چاند کو گرہن لگے گا، اس سال کا دوسرا گرہن 14 دسمبر کو ہو گا۔انہوں نے 14 دسمبر کو ہونے والے رواں سال کے دوسرے سورج گرہن سے متعلق بتایا کہ وہ پاکستان میں نہیں دیکھا جا سکے گا۔یاد رہے کہ ا س سے قبل گزشتہ سال کا آخر ی سورج گرہن دسمبر کے مہینے میں 26 دسمبر کو ہوا تھا جس کا نظارہ پوری دنیا نےکیا ےاج اس کا دورانیہ چھ گھنٹے

تک رہا تھا ۔ جس کی وجہ سے طاقت ور ترین سورج گرہن کو ماہرین نے رنگ آف فائر کا نام بھی دیا تھا۔ ناظرین جب انسان کا علم بہت محدود تھا تو توہم پرستی بھی عروج پر تھی، ہر شے جو پسند آتی تھی اسے خوش قسمتی اور جس چیز سے خوف آتا تھا اسے عذاب سے جوڑ دیا جاتا تھا، گرہن بھی ایسا ہی عمل تھا۔سورج گرہن فلکیاتی اعتبار سے اجرام فلکی کے گردش کے دوران رونما ہونے والا معمول کا واقعہ جبکہ مذہبی اعتبار سے اللہ تعالیٰ کی اہم نشانیوں میں سے ایک ہے۔تاہم اس سے کئی توہمات بھی وابستہ ہیں، جس میں ایک یہ بھی ہے کہ سورج گرہن اقتدار منتقل ہونے سمیت عالمی سیاست میں بڑی تبدیلیاں لاسکتا ہے۔

Share

About admin

Check Also

مزدور کی کم از کم تنخواہ 25ہزار روپے؟ ہائیکورٹ نے بڑا فیصلہ سنا دیا

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ ہائیکورٹ نے مزدور کی کم از کم تنخواہ 25 ہزار روپے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com