Breaking News
Home / دلچسپ و عجیب / کم عمر لڑکے کی زیادہ عمر کی لڑکی سے شادی کرنا کیسا ہے؟وہ بات جو آپ کو معلوم ہونی چاہئے

کم عمر لڑکے کی زیادہ عمر کی لڑکی سے شادی کرنا کیسا ہے؟وہ بات جو آپ کو معلوم ہونی چاہئے

قرآن وحدیث میں جو رشتے بیان کیے گئے ہیں کہ ان ان عورتوں کے ساتھ نکاح نہیں ہو سکتا۔ اس میں کہیں بھی یہ شرط نہیں لگائی کہ اگر اتنی عمر کی لڑکی ہو تو اس کے ساتھ فلاں عمر کے لڑکے کا نکاح جائز نہیں۔ لہذا اسلام نے کوئی پابندی نہیں لگائی ہے، عمر کے حوالے سے یہ ضرور ہے کہ لڑکا لڑکی دونوں ایک دوسرے کو پسند کرتے ہوں۔ اس لیے اسلام نے تو دونوں کی باہمی رضا مندی کی شرط لگائی ہے۔ عمر میں کم بیشی کے پیش نظر اگر دونوں میں ہم آہنگی پائی جاتی ہو اور دونوں ایک دوسرے کو چاہتے ہوں تو نکاح کر سکتے ہیں اس میں کوئی حرج نہیں ہے۔ ورنہ دونوں کو آزادی ہے اگر وہ نہیں کرنا چاہتے تو انکار کر دیں۔ لڑکی کو لڑکا پسند نہ ہو انکار کر دے اسلام نے اجازت دی ہے۔حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حیات مبارکہ سے ہمیں دونوں طرح کی مثالیں ملتی ہیں۔ 25 سال کی عمر مبارک میں 40 سالہ حضرت خدیجہ رضی اللہ عنہما سے شادی کرنے کی مثال بھی اور پھر تقریبا 53 سال کی عمر مبارک میں تقریبا 19 سالہ سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہما سے شادی کرنے کی بھی۔

Share

About admin

Check Also

’یہ لڑکی اپنے والد کی کافی میں اپنے دودھ کے چند قطرے ڈال کر کیا کرتی ہے؟۔۔۔‘ خاتون نے ایسی بات کہہ دی کہ لوگوں کو یقین نہ آئے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)مائیں بچوں کو تو اپنا دودھ پلاتی ہیں اور یقینا بچوں کے لیے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com